امریکا افغان امن مذاکرات میں پاکستان کے کردار کی تعریف

0
12

امریکی نمائندہ خصوصی برائے پاکستان و افغانستان زلمے خلیل زاد کا کہنا ہے کہ امریکہ چاہتا ہے کہ طابان بھی افغان انتخابات میں حصہ لے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق واشنگٹن میں یو ایس انسٹیٹیوٹ آف پیس سے خطاب کرتے ہوئے امریکی نمائندہ خصوصی برائے پاکستان و افغانستان زلمے خلیل زاد نے کہا کہ طالبان سے مذاکرات ابھی ابتدائی مراحلے میں ہیں۔جبکہ امریکہ افغانستان سے نکلنے کا نہیں، امن کا معائدہ کر رہا ہے کیونکہ طالبان سمجھتے ہیں کہ افغانستان میں امن فوج سے نہیں ہوسکتا۔امریکہ افغانستان سے جنگ کے خاتمے کے لیئے کوشاں ہے۔

زلمے خلیل زاد نے مزید کہا کہ پاکستان نے امریکہ اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے لیئے سہولت کاری کا کردار ادا کیا ہے۔امریکہ پاکستان کے ساتھ اچھے تعلقات چاہتا ہے۔تاہم پاکستان کا ان مذاکرات کی کوششوں میں مثبت کردار قابل تعریف ہے۔

امریکی نمائندہ خصوصی نے مزید بتایا کہ امریکہ افغان حکومت اور طالبان کے درمیان مذاکرات چاہتا ہے۔جبکہ افغان سرزمین کسی دوسرے کے خلاف استعمال نہیں ہونی چاہیئے۔طالبان سے پر امن انتخابات کے لیئے معائدہ طے پایا جائے گا۔امید ہے رواں سال جولائی سے قبل معائدہ طے پا جائے گا۔تاہم اگر معائدہ نہ بھی ہوا تو افغان الیکشن بر وقت ہوں گے۔ کیونکہ امریکہ چاہتا ہے کہ طابان بھی افغان انتخابات میں حصہ لے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here