شہباز شریف کو بیماری کی بنیاد پے ضمانت پر رہائی مل سکتی ہے، نیب وکیل

0
17

عدالت میں دلائل دیتے ہوئے قومی احتساب بیورو نیب کے وکیل کا کہنا تھا کہ شہباز شریف کو بیماری کی بنیاد پے ضمانت پر رہائی مل سکتی ہے۔

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف اور مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کی آشیانہ اقبال ہاؤسنگ اسکینڈل اور رمضان شوگر ملز کیس سے متعلق لاہور ہائی کورٹ میں درخواست ضمانت پر سماعت ہوئی۔طبی بنیادوں پر رہائی کی درخواست کرتے ہوئے شہباز شریف نے موئقف اختیار کیا کہ قومی احتساب بیورو نیب کی جانب سے میرے خلاف سیاسی بنیادوں پر کیس بنائے گئے۔ عدالت درخواست ضمانت منظور کرتے ہوئے رہائی کا حکم دے۔

قومی احتساب بیورو نیب کے وکیل شیخ اکرم نے عدالت کو بتایا کہ شہباز شریف کو جب طبی سہولیات کی ضرورت ہوتی ہے تو انہیں وہ بھی مہیا کی جاتی ہیں۔شہباز شریف ریمانڈ کے دوران بھی اجلاس منعقد کر رہے ہیں۔تاہم اگر جیل اور ہسپتال میں علاج نا ممکن ہے تو ضمانت دی جا سکتی ہے۔

میرٹ پر دلائل دیتے ہوئے نیب کے وکیل شیخ اکرم کا کہنا تھا کہ شہباز شریف نے منظور نظر فرم کو ٹینڈر دیئے جبکہ 2012میں ٹینڈر لطیف اینڈ سنز کو دیئے مگر اس کے بعد اس کے کام میں مداخلت شروع کردی گئی۔شہباز شریف اور فواد حسن فواد نے ان کو ڈرا دھمکا کر ٹینڈر منسوخ کرنے کا حکم دیا۔شہباز شریف کے خلاف نیب کو درخواستیں موصول ہوئی تھی جس پر انکوائریاں 2018میں شروع ہوئی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here