طالبان اور افغان رہنما روس میں امن مذاکرات کا حصہ بننے کے لیئے راضی

0
14

روس میں ہونے والے امن مذاکرات میں طالبان اور افغان رہنماؤں نے شرکت کے لیئے حامی بھر لی ہے۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق طالبان کے وفد اور سابق افغان صدر حامد کرزئی سمیت دیگر افغان رہنماؤں کی روس کے دارالحکومت ماسکو میں ہونگے۔تمام فریقین نے شرکت کے لیئے رضامندی ظاہر کردی ہے۔

افغان طالبان کے امن مذاکرات میں کابل حکومت کے نمائندے کی غیر موجودگی کے مطالبے کو تسلیم کرلیا گیا۔جس کے بعد ماسکو میں ہونے والے امن مذاکرات میں افغان حکومت کو طلب نہیں کیا گیا۔

دوسری جانب افغان صدر اشرف غنی نے ماسکو میں ہونے والے امن مذاکرات پر اپنا رد عمل دیتے ہوئے طالبان کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ان کا کہناتھا کہ طالبان افغانستان کی حقیقی قیادت سے ملنے سے انکار کرنے پر غیر جمہوری قوت ہونے کا ثبوت دے رہے ہیں۔افغان عوام ایسے کسی مذاکرات کو نہیں مانیں گے جس میں ان کے حقیقی نمائندے شریک نہ ہوں۔سابق صدر حامد کرزئی کو کابل حکومت کے نمائندے کے بغیر امن مذاکرات میں شرکت نہیں کرنی چاہیئے۔

واضع رہے کہ اس سے قبل قطر اور سعودی عرب میں افغان طالبان اور امریکہ کے درمیان طویل مذاکراتی عمل کے بعد کئی نکات پر اتفاق رائے ہو چکا ہے جبکہ فریقین کی جانب سے ایک دوسرے کو کئی معاملات پر یقین دہانی بھی کرائی گئی ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here